Disciplined Dreaming 18

Disciplined Dreaming.منظم خواب

13 / 100

Disciplined Dreaming. منظم خواب

مصنف کا تعارف:

کتاب Desciplined Dreaming’’ ‘’کے مصنف جو ش لنکنر (Josh Linkner) 28 جولائی 1970 کو امریکہ کی ریاست فلوریڈا میں پیدا ہوئے۔وہ اس وقت بہت بڑے بزنس مین، لیکچرر((speaker اور مصنف ہیں۔ انہوں نے کئی مشہور کاروباری کمپنیوں کی بنیاد رکھی ۔جن میں ای ۔پرائز بھی شامل ہے ۔ 2004 میں انہیں امریکہ کا کم عمر سرمایہ کار قرار دیا گیااور اعزاز سے نوازا گیا۔ انہوں نے بنیادی طور اپنے کیرئیر کا آغاز جَیز گٹار jazz guitar بجانے سے کیا اور گٹار کو انہوں نے جدت اور بزنس کی ترقی کے لئے استعمال کرکے خوب نام کمایا۔

کتاب کا تعارف:

مصنف جوش لنکنر کے خیال میں بہت سی کاروباری کمپنیاں جدت، منصوبہ بندی، اور مہارت میں بہت آگے ہوتی ہیں اور ان کے پاس چھوٹے سے چھوٹے مسئلے سے لیکر بڑے سے بڑے مسئلے کا حل موجود ہوتا ہے لیکن اگران کا باریکی سےمطالعہ کیا جائے تو معلوم ہو گا کی ان تمام شاندار کمپینوں میں ایک عنصر سرے سے ہی غائب ہوتاہے اور وہ ہے “تخلیق”۔ چنانچہ کاروباری کمپنیوں کے لئے ضروری ہے کہ وہ اپنے ملازمین کی تخلیقی صلاحیتں اجاگر کریں ۔ اگر ایک کمپنی جدت اور تخلیق کوا پنا لےتو وہ تعمیر و ترقی کی نئی راہیں کھول سکتی ہے۔اس ضمن میں امریکہ میں 200 کاروباری کمپنیوں پر تحقیق کی گئی جس سے یہ ثابت ہوا کہ یہ تمام کمپنیاں تخلیق کو اپنی ترقی کے لئے اہم سمجھتی ہیں لیکن ان کے پاس تخلیقی صلاحیتو ں کے موثر اظہار کا کوئی منظم نظام موجود نہیں ہے ۔ دنیا کی ترقی کا دارومدار تخلیقی صلاحیتوں کے اظہار پر ہے۔

مصنف نے اس کتاب کے ذریعے یہ بات ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ کس طرح کاروباری کمپنیاں ایک منظم نظام کے تحت اپنے اندر تخلیق کے عمل کو نظم و ضبط کے تحت لا کر عروج حاصل کر سکتی ہیں۔

کتاب کے اہم نکات:

کتاب “منظم خواب “کے مطابق تخلیق ، ان پانچ مدارج سے گزر کر عملی شکل میں آتی ہے۔

1۔ سوال : کائنات کے بے شمار راز صرف اس لئے ہم پر فاش ہوئے کہ انسان نے انہیں جاننے کی کوشش کی اور ان کا آغاز کسی نہ کسی سوال سے ہوا۔ یہ سوالات ہمیشہ کیوں، کیا، کیسے، کب اورکہاں سےشروع ہوتے ہیں۔

2۔ تیاری: تیاری کسی خیال یا سوچ پر عمل کرنے کا نام ہے ۔ تیاری کے مرحلے میں آپ اپنے وسائل ، افرادی قوت اور اور منصوبےکے جذئیات پر کام کرتے ہیں۔ تیاری اچھی ہو تو نتائج بہتر ملتے ہیں۔

3۔دریافت : آپ ایسےموقع سے فائدہ اٹھائیں جو کے آپ کے اندر تخلیقی سوچ پیدا کرنے میں مدد دے سکتا ہو ۔ اسی طرح ہر چیز کا بامقصد نکتہ نظر سے تجزیہ کریں۔دوسروں کے تجربات کا جائزہ لے کر انھیں اپنے مسائل حل کرنے کیلئے استعمال کریں اور ایک نئی سمت اختیار کر کے ترقی حاصل کریں۔

4۔ منصوبے پر سوچ و بچار : جب آپ ایک کاروبار ی منصوبہ بناتے ہیں تو اس میں آپ اپنی ہر چیز کو ہی داؤ پر لگا دیتے ہیں۔چنانچہ ان حالات میں آپ ایسے منصوبے پر سوچ بچار کریں جوقابل عمل اور اچھوتا ہونے کے ساتھ ساتھ عوامی ضرورت کے مطابق ہو اور لوگ اس کو ہاتھوں ہاتھ لیں۔

5۔ حل پیش کرنا/متعارف کروانا:

یہ آپ کے کاروباری منصوبے کا اہم ترین مرحلہ ہے۔ اس میں آپ کو اپنے تمام پروگراموں کو عملی جامع پہنانا ہے۔ اگر آپ کا منصوبہ ٹھیک سمت میں چل پڑے تو کامیابی آپ کا مقدر بن جاتی ہے۔ اگر منصوبہ درست سمت میں نہ ہو تو ناکامی سے دو چار ہونا پڑے گا۔

Key-1۔ سوال:

کائنات کے بے شمار راز صرف اس لئے ہم پر فاش ہوئے کہ انسان نے انہیں جاننے کی کوشش کی اور ان کا آغاز کسی نہ کسی سوال سے ہوا۔ یہ سوالات ہمیشہ کیوں، کیا، کیسے، کب اورکہاں سےشروع ہوتے ہیں۔ڈسپلنڈ ڈریمنگ(منظم خواب) کے پروسس کےآغاز میں آپ اپنے ہاتھ سے لکھا خاکہ تیار کریں جو کہ آپ کے ادارے کی تمام تر صلاحیتوں اور مہارتوں کے مطابق ہو۔ آپ اپنی تنظیم کی تخلیقی صلاحیتوں کو سامنے رکھ کر سوالات تیار کریں اور ممکنہ تخلیقی تراکیب بنائیں ۔

کسی بھی مسئلہ کے حل کے لئے آپ کو قابلِ عمل سوچ کے ساتھ اس کا حل تلاش کرنا ہوگا۔جتنا بہتر طریقے سے آپ مسئلے کی وضاحت کریں گے، اُتنی ہی آسانی سے آپ اس کے تخلیقی حل کی طرف بڑھ سکیں گے۔ سوالات کی وضاحت کیلئے آپ کی تحریر مندرجہ ذیل 9 نکات پر مشتمل ہو :

1۔ آپ کے مقاصد کیا ہیں؟

اپنے مطلوبہ مقاصد واضح کریں۔ صرف ایک جملے میں وضاحت کریں کہ آپ اپنی تخلیقی صلاحیت کے استعمال سے کیا حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

2۔ آپ کو کن کن تخلیقی چیلنجوں کا سامنا ہے؟

آپ کو درپیش تخلیقی چیلنجز/مسائل کی تعریف کریں ۔ پھر ان کی اونچ نیچ کو اچھی طرح ذہن نشین کریں ۔اپنی منصوبہ بندی کو ضرورت کے مطابق تبدیل کرنے پر غور کریں اور مشاہدات کو سامنے رکھتے ہوئے حالات کا مقابلہ کریں۔

3۔ چیلنج کا تجزیہ کریں:

درپیش مسائل کے حل کے لئے موجودہ تراکیب کو ذہن میں رکھ کر مستقبل میں پیش آنے والے حالات کا تجزیہ کریں۔ دستیاب رقم، ذرائع اور لامحدود وقت کو سامنے رکھتے ہوئے آنے والے حالات کا تجزیہ کریں۔

4۔ متوقع مزاحمت کو سامنے رکھیں:

اپنے منصوبے کے نفاذ میں آنے والی مشکلات اور حالات ومزاحمتی عوامل کو ذہین میں رکھیں۔دوران مزاحمت اپنے نقصانات کا تجزیہ کریں اور پہلے سے ہی ان کا مقابلہ کرنے کیلئے تیارہوجائیں۔مزاحمتی عوامل سے مرادآپ کے دشمن ، رقیب اور مشکلات ہیں ۔

5۔ اپنے سامعین کا انتخاب کریں:

آپ نے کن کن لوگوں کو اپنے نئے تخلیقی نظرئیے کے بارے میں بتانا ہے ؟ اور کس انداز سے انہیں قائل کرنا ہے ؟ کن کن دلائل سے انہیں متاثر کرنا ہے؟ ایک بات پہلے سے ہی اچھی طرح جان لیں کہ آپ کے نئے منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کیلئے موجودہ افرادی قوت کافی ہو گی یا اس میں اضافہ ضروری ہے۔

6۔ گفتگو کے لئے آسان الفاظ کا چناؤ کریں:

دوسروں سے بات چیت کے لئےگفتگو کا آسان طریقہ انتخاب کریں جس سےآپ اپنے نئے تخلیقی آئیڈیاکو متعلقہ لوگوں تک پر اثر انداز میں پہنچا سکیں تا کہ وہ آپ کی بات سمجھ کر آپ کی کامیابی میں اپنا حصہ ڈالیں۔

7۔ مقابلہ:

آپ کو پہلے سے مارکیٹ میں موجود ان لوگوں کے ساتھ اپنا مقابلہ کرنا ہوگا جو آپ کے شعبے سے منسلک ہیں اور ایسے ہی ذرائع کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔

8۔ پراجیکٹ:

مطلوبہ نتائج اور مقاصد کے حصول کیلئے افراد اور وقت کو مد نظر رکھ کر ایک خاکہ تیار کریں۔افراد اورذرائع کے استعمال کی ترتیب، اوقات اور مراحل طے کریں ۔ واضح کریں کہ کس کس طرح آپ نے کیا کیا کام کرنا ہے۔

9۔ تجزیاتی گراف/معیار:

کامیابی اور مطلوبہ نتائج کے لئے ایک تجزیاتی گراف بنائیں۔ اس میں درج ہو کہ آپ کو کس سطح اور کس معیار کی کامیابی درکار ہے اور تجزیہ کرتے رہیں کے آپ کس حد تک نتائج حاصل کر چکے ہیں اور کون کون سے نتائج حاصل کرنا ابھی باقی ہیں۔اسی مختصر خاکے سے آپ کو اپنی سرمایہ کاری سے حاصل ہونے والے نتا ئج اور کامیابی کا پتہ چلے گا۔یہ خاکہ آپ کو ایک گائیڈ لائن دے گا جس کے ذریعہ آپ اپنی ذہنی تخلیق کو عملی جامہ پہنا سکیں گے۔

“ہمارا باقاعدہ رد عمل اور ہماری عادات ہماری سوچ کا اظہار ہیں۔اگر ہم اچھی عادات اپنالیں تو پھر بہترین نتائج حاصل کرنا ہماری عادت بن جائے گی”۔

تخلیقی صلاحیت کو عملی جامہ پہنانے والے عناصر:

مطلوبہ نتائج کے بارے میں جب آپ کی سوچ واضح ہوجائے تو سمجھیں وقت آگیاہے کہ آپ اپنے منصوبےکا باقاعدگی سے آغاز کریں۔ یہاں آپ کے ساتھی اپنی اپنی تخلیقی صلاحیتوں کا استعمال کرتے ہوئے آپ کا ساتھ دیتے ہیں۔ اس ضمن میں آپ کاد ماغ آپ کی زبردست رہنمائی کرتا ہے کیونکہ آپ کے دماغ کے دونوں حصے ایک

مربو ط نظام کے تحت چل رہے ہوتے ہیں ۔ دماغ کا بایاں حصہ” عقلی تجزیہ” کرتا ہے جبکہ دایاں حصہ چیزوں کے بارے میں “سوچتا اورتخلیق” کرتا ہے۔ آپ قدرت کی طرف سے دی گئی ان صلاحیتوں سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔ اس کے لئے مندرجہ ذیل پر توجہ دیں:

1۔اپنے آپ سے تین سوالات پوچھیں:

تاریخ انسانی کا اگر مطالعہ کیا جائے تو ہمیں تو معلوم ہوتا ہے کہ ہر ایجاد کا آغاز تجسس سے ہو ا اور تجسس کا اظہار سوالا ت سے ہوتا ہے۔ چنانچہ آپ بھی اپنی تخلیقی صلاحیتوں کے اظہار کے لئے مندرجہ ذیل تین سوالات خود سے پوچھیں:

1۔ ایسا کیوں ہے؟

2۔اگر ایسا نہ ہوتا تو؟

3۔ ایسا کیوں نہیں جیسے میں چاہتا ہوں؟

ان سوالات کے ذریعے آپ کو اپنے منصوبے کی پوزیشن اور اس میں حائل مشکلات اور ان کا ممکنہ حل تلاش کرنے میں مدد ملے گی ۔

2۔ استعاروں کا استعمال کریں:

انسان کے اندر جوش، جذبات، خیالات اور افکار کا ایک وسیع سمندر موجزن ہے جن کے اظہار کے لئے وہ ماضی کے کارناموں اور ایسے کرداروں کا سہارا لیتا ہے جن سے جوش و ولولہ اور عزم و حوصلہ ٹپکتا ہو۔ ماضی کے ہیرو ز کی کامیابیوں اور فتوحات ہمارے لئے دیومالائی کہانیوں کی حیثیت رکھتی ہیں۔ ان کے لئے استعمال ہونے والے الفاظ اور جملوں کو استعار ہ کہا جاتا ہے۔ سادہ ترین الفاظ میں کسی ایک چیز کو اپنے کسی خاص وصف کی بنا پر ہو بہو کسی دوسری چیز کی مانند قرار دینا ؛استعارہ کہلاتا ہے۔ آپ اپنے تخلیقی سفر کے دوران اپنے ہیروز کے استعاروں سے سبق حاصل کریں۔مثلا ایک لڑکی گوشت کے ٹکڑوں کو دونوں کونوں سے کاٹ کر پکا رہی تھی۔ جب اس سے پوچھا کہ تم ایسا کیوں کر رہی ہو؟تو لڑکی نے جواب دیا کہ اپنی ماں سے اس نے اسی طرح سیکھا ہے اور اس کی ماں نے اپنی ماں سے اسی طر ح سیکھا تھا۔ جب اس لڑکی نے اپنی دادی سے وجہ پوچھی تو اس نے بتایاکہ اصل بات یہ تھی کہ وہ فرائی پان چھوٹا تھا جس میں وہ گوشت پکا رہی تھی۔ اس لیے گوشت کے بڑے ٹکڑے پکانا اس میں مشکل تھے۔ اس لڑکی نے ، اور اس کی ماں نے بغیر وجہ جانے گوشت پکانے کا یہ طریقہ سیکھ لیا تھا۔

اگر آپ کو بھی اپنے اداے میں اس طرح کا کلچر نظر آتا ہے تو اسے فوری تبدیل کرنے کی ضرورت ہے، تا کہ نئے اور فریش آیئڈیاز کے ذریعے تخلیقی سوچ کو پروان چڑھایا جا سکے۔

3۔ سوچ کو وسعت دیں:

کام کا آغاز کرنے والوں کی سوچ کو وسعت دینا ، کارکنوں کے خیالات اور سوچ کو کھلے دل سے تسلیم کرنا اور ان کی چھوٹی چھوٹی کامیابیوں پر داد دینا تخلیق اور جدت کے سفر کو تیز تر کر دیتا ہے۔

چیزوں کو ترتیب سے دیکھنے کی عادت ڈالیں ۔ ان کو مرحلہ وار کرنے کے لئے ایک فہرست بنائیں ۔یعنی یہ کیوں ضروری ہے؟ ایک سوال خود سے پانچ بار پوچھیں مسئلے کو سمجھیں کہ یہ ایک کارکن پر کتنا اثر ڈال رہا ہے اور پھر اجتماعی طور پر اس کے اثرات کمپنی پر کتنےہوں گے اور پھر اس کے حل سے ایک شہر، ریاست یا قوم پر کتنا فرق پڑے گا۔اس کے حل کیلئے نئے انداز تلاش کریں۔ اگر آپ مسئلے کا مرحلہ وار تجزیہ کرنے کا ہنر جان جائیں تو اس کا حل خود بخود آپ کے ذہن میں آجائے گا۔اپنے پروجیکٹ میں شامل کئے گئےنئے ملازمین سے ان کی نئی ملازمت اور جگہ پر کام کرنے کے دوران پریشانیوں، مشکلات کے بارے میں ضرور پوچھیں تاکہ آپ کو پتہ چلے کس چیز کو وہ اچھا سمجھتے ہیں اور کس کو غلط اور ان کی پسند و ناپسند کیا ہے اور آپ ان کے مسائل کو کتنا سمجھتے ہیں۔ملازمین کی ذاتی زندگی کے مسائل ،مثال کے طور پر ان کی رہائش، خوراک، بچوں کی تعلیم و تربیت اور صحت کو سب سے پہلے حل کریں۔ اس کے بعد انہیں اپنے کام کی طرف لائیں۔ ایسا کرنے سے وہ دل و جان سے آپ کے ساتھ ہوں گے۔اس کے علاوہ نئے ملازمین کی تخلیقی صلاحیتوں ، مہارتوں اور ان کی سوچ میں پائے جانے والی جدت سے اپنے لئے بہتری تلاش کریں جو کہ کمپنی کیلئے آگے چل کر سومند ہو گی۔

4۔ اہم تخلیق کاروں کی مہارت کو بہتر بنائیں:

زندگی میں سب سے اہم چیز یہ ہے کہ انسان بہتر سے بہترین کی تلاش میں لگا ر ہتا ہے۔ اسی سے تعمیر و ترقی کے نئے نئے راستے کھلتے ہیں۔ یاد رکھیں! آپ تنہا خواہ جتنے بھی باصلاحیت ہوں، کچھ بھی نہیں کر سکتے کیوں کہ ادارے ایک ٹیم ورک سے آگے بڑھتے ہیں اور کامیاب ہوتے ہیں۔ اس سلسلے میں اہم بات یہ ہے کہ آپ اپنے ساتھ کام کرنے والے تخلیقی لوگوں کو پروموٹ کریں اور ان کی تخلیقی صلاحیتوں کو چار چاند لگانے کی کوششوں میں لگے رہیں۔اپنے اہم کارکنوں کی ان پانچ صلاحیتوں /مہارتوں پر کام کریں:

1۔تعلقات بنانا

2۔سوال پوچھنا

3۔ گہرا مشاہدہ کرنا

4۔ تجربہ کرنا

5۔ نیٹ ورک بنانا

ایک تخلیق کار جدت سے بھر پور سوچ کے ساتھ اپنے نظریات اور لوگوں کے درمیان مطابقت پیدا کرتا ہے اور وہ اپنے مشکل سے مشکل سے افکار لوگوں کو سمجھانے میں کامیا ب ہو جاتا ہے۔اہم تخلیق کا رپرتجسس سوالات پوچھتے ہیں اور اس کے ذ ریعے اپنی نئی سوچ کو لوگوں سےمتعارف کرواتے ہیں۔ اس طرح انھیں مسائل کا حل نکالنے میں آسانی ہوتی ہے۔تخلیق کار اپنے ارد گرد فنی ماہرین کی ایک ٹیم تشکیل دیتے ہیں جو کہ مسا ئل کا مقابلہ کرنے اور ان کا حل تلاش کرنے میں مہارت رکھتی ہے۔

5۔ ذہنی الجھنوں سے گریز کریں:

اگر آپ ماضی کے مسائل کے حل کا تجربہ رکھتے ہیں تو اپنے تجربے کو استعمال کرتے ہوئے مسئلے کا سیدھا سادہ حل تلاش کریں اور نئی الجھنوں سے گریز کریں۔پہلے مسئلے کی تہہ تک جائیں۔ درپیش مسئلے پر پہلے خود سوچیں، پھر اپنے ماہرین کی ٹیم سے اس پر تبادلہ خیال کریں ۔ مسئلے کے حل کی طرف جاتے وقت دوسروں کی رائے کو اہمیت دیں ۔ اس سے آپ کئی ذہنی الجھنوں سے بچ جائیں گے۔

6 ۔اپنی معلومات اور آگاہی کو ہمیشہ بہتر کرتے رہیں:

اپنی ، اپنے جاری منصوبوں ، ملازمین کی صلاحیتوں اور راستے میں حائل مشکلات کی جانکاری رکھیں ۔ ان چیزوں پر پہلے سے سوچ بچار کر کے رکھیں جو آپ کو نقصان پہنچا سکتی ہوں۔ہر وقت اپنے ادارے کے اندرونی حالات کے بارے میں باخبر رہیں اور ان لوگوں پر خاص طور پر نظر رکھیں جو نااہل ، کام چور اور منفی خیالات کے حامل ہوں اور دوسروں کو تقویت دینے کی بجائے ان کے لئے زحمت کا باعث بنتے ہوں۔اس بارے میں فلم کے پروڈیوسر، جیمز کیمرونے کیا خوبصورت بات کی ہے:”تجسس ایک زبردست طاقت ہے”۔

تخلیقی عمل پر اس کتاب کے مصنف نے اپنی قیمتی رائے ان الفاظ میں بیان کی ہے”تخلیقی عمل ایک تصوراتی سوچ اور نظریہ ہے۔ اسے سمجھنا کافی مشکل ہے۔اس کے بارے میں پہلے سے منصوبہ بندی کی ضرورت ہے کبھی آپ پر بہت اچھا وقت آتا ہے اور کبھی آپ کو برے دنوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔اس دوران آپ سیکھنے کے عمل پر زور دیتے رہیں کیونکہ آپ جوکچھ تخلیق کررہے ہیں وہ سائنس نہیں بلکہ ایک فن ہے۔( یعنی آپ جیسے چاہیں سوچ سکتے ہیں جبکہ سائنس ایک کلیے یا فارمولے کے تحت ہی چل سکتی ہے)

Key-2۔ تیاری :

تیاری کسی خیال یا سوچ پر عمل کرنے کا نام ہے ۔ تیاری کے مرحلے میں آپ اپنے وسائل ، افرادی قوت اور اور منصوبے کے جذئیات پر کام کرتے ہیں۔ تیاری اچھی ہو تو نتائج بہتر ملتے ہیں۔ آپ نے اکثر دیکھا ہوگا کہ مقابلے سے پہلے اتھلیٹ اور موسیقار ایک طویل اور مشکل ریاضت کرتے ہیں۔اگر آپ اپنی تخلیقی سوچ کو عملی جامہ پہنانا چاہتے ہیں تو آپ کو پہلے بھر پور تیاری کرنی پڑے گی۔سب سے پہلے آپ کو تخلیقی سوچ کے پوشیدہ اور مشکل نکات کو سمجھنا ہوگا۔پھر اس پر عمل در آمد کیلئے عملی ماحول ،جو کہ ملازمین کیلئے صحت مند ہو ،ترتیب دے کر کام کا آغاز کرنا ہو گا۔اپنے تخلیقی نظرئیے کے عملی نفاذ کیلئے تیاری ضروری ہے۔جس میں ان باتوں کا خیال رکھیں:

1۔چیلنج کا مقابلہ کرنے کیلئے ذہنی اور جسمانی طور پر خود کو تیار کریں۔

2۔ایک عملی اور قدرتی ماحول پیدا کریں تاکہ اس میں آپ کی تخلیقی سوچ ،عمل میں ڈھل سکے۔

اپنے مشن کی تیاری کے لئے مندرجہ ذیل اقدامات کریں:

کسی بڑے منصوبے پر کام کا آغاز کرنے سے پہلے خوشگوار ماحول بنانے کیلئے دوستی ، جان پہچان اور رشتوں کا سہارا لیں۔
اپنے دفتر سے دور سیر کیلئے چلے جائیں جس سے آپ کچھ سیکھ سکتے ہوں تا کہ آپ کے اندر کچھ کرنے کا جذبہ پیدا ہو ۔
روزانہ اپنے معمول میں وقفہ کر کے پانچ منٹ تک کوئی کھیل کھیلیں۔
جذبات کو ابھارنے والے اقوال ذریں پڑھیں اور اپنے ارد گردپر غور کریں تاکہ آپ میں ترقی کا جذبہ برقرار رہے۔
لوگوں کی حوصلہ افزائی کریں اور تنقید سے گریز کریں۔
لوگوں کے جذبات کی قدر کریں اور ان کو کبھی بھی حقیر نہ سمجھیں۔
اپنے ملازمین کی نئی سوچ کی تعریف کریں اور انہیں اچھے کام پر انعام دیں۔
ہر کسی کو اپنی حیثیت سے بڑھ کر کام کرنے کیلئے تیار کریں ۔اور مشکلات کا حل نکالنے کیلئے نئے طریقے تلاش کریں۔
ملازمین کو نئے طریقے اور سوچ کو آزمانے کیلئے موقع دیں اور ان کی حوصلہ افزائی کریں۔
ملازمین کے کام کی حوصلہ افزائی کیلئے ،عملی تجربہ کریں۔غیر روایتی کام کی تعریف اور اچھے نتائج کی بہت زیادہ تعریف کریں۔
اپنےدفتر کو غیر روایتی طور پر ڈیزائن کریں اچھے لوگوں کو سہارا دیں۔خوشگوار اور پرسکون بنائیں۔
اپنی سرگرمیوں کا شیڈول تیار کریں۔ہر ایک کو اپنے تجربات سے استفادہ کرنے کا موقع دیں۔
ملازمین کو کہیں کہ کسی دور پر فضا مقام پر دعوت یاتقریب میں شام ہو کر اپنے آپ کو تازہ دم کریں۔
ملازمین کو ایسے کام کرنے دیں جو وہ اپنے دفتر میں نہیں کرسکتے ۔مثلاَََ کھیل کود ،غوطہ خوری اور سکائی ڈائیونگ وغیرہ کے کھیلوں میں ان کی شمولیت یقینی بنائیں۔
ایسی جگہوں کی سیر کرائیں جن سے ان میں کام کی لگن پیدا ہوتی ہو۔
دفترمیں تعمیری اور اچھی چیزیں رکھیں جیسے تھامس ایڈیسن اپنی کرسی کی وجہ سے مشہور تھا جس پر بیٹھ کر وہ گھنٹوں غور وفکر کیا کرتا تھا۔
کھیلوں کی اہمیت پر افلاطون نے کہاہے: “کھیل ایک گھنٹے میں ایک آدمی کو وہ کچھ سکھا دیتا ہے جو آپ ایک سال کی گفتگو میں بھی نہیں سیکھ پاتے” ۔

Key-3۔دریافت:

آپ ایسےموقع سے فائدہ اٹھائیں جو کے آپ کے اندر تخلیقی سوچ پیدا کرنے میں مدد دے سکتا ہو ۔ اسی طرح ہر چیز کا بامقصد نکتہ نظر سے تجزیہ کریں۔دوسروں کے تجربات کا جائزہ لے کر انھیں اپنے مسائل حل کرنے کیلئے استعمال کریں اور ایک نئی سمت اختیار کر کے ترقی حاصل کریں۔ ترقی کے سفر میں کبھی بھی مایوس نہ ہوں۔آپ خود دوسروں کے تجربات کا تجزیہ کریں۔اور ان کوتخلیقی نظر سے دیکھیں۔ اپنے تخلیقی نظریات کو مزید تقویت دینے کے کیلئے مندرجہ ذیل باتوں پر عمل کر یں:

1۔ اپنی سوچ میں وسعت/گہرائی پیدا کریں۔

2 ۔اچھے نکات کا تعین کریں۔

3 دوسروں کے کچھ نظریات مستعار لیں۔

4 ۔حائل پریشانیوں کو ہمت سے جانچیں۔

5۔ ایسا منصوبہ بنائیں جس پر آپ عمل کرسکتے ہوں۔

6۔اپنے مسائل کو دوسروں کے نکتہ نظر سے بھی جانچیں ،مثال کے طور پر ایک موسیقار یا ایک نقشہ نویس کس طرح اپنے پیشہ وارانہ مسائل کو حل کر تے ہیں۔

Key-4۔ منصوبے پر سوچ و بچار :

جب آپ ایک کاروبار ی منصوبہ بناتے ہیں تو اس میں آپ اپنی ہر چیز کو ہی داؤ پر لگا دیتے ہیں۔چنانچہ ان حالات میں آپ ایسے منصوبے پر سوچ بچار کریں جوقابل عمل اور اچھوتا ہونے کے ساتھ ساتھ عوامی ضرورت کے مطابق ہو اور لوگ اس کو ہاتھوں ہاتھ لیں۔ چونکہ آپ ایک نئے کام کی داغ بیل ڈال رہے ہیں ،اس لئے کوشش کریں کہ آپ اور آپ کی ٹیم خیالات سے محروم نہ ہو۔ اور وہ آئیڈیا مارکیٹ میں لائیں جس کی اشد ضرورت ہو۔ اس سب کے لئے آپ کے اند ر تٰخلیقی صلاحیت موجود ہو ۔ یاد رکھیں! آپ کی ٹیم کی تخلیقی صلاحیت ہی آپ کو کامیابی سے ہمکنار کر سکتی ہے۔ اس کے لئے مندرجہ ذیل بارہ نکات پر عمل کریں:

1۔ مختلف شعبوں کے لوگوں سے مشورہ کریں:

زندگی کے مختلف شعبہ جات کے لوگوں کو ایک جگہ اکٹھا کر کے ان کے سامنے اپنا مسئلہ رکھیں جس پر وہ بحث کریں ۔آپ غور سے ان کے دلائل کا مشاہدہ کریں اور خود ایک نتیجہ اخذ کرنے کی کوشش کریں۔

2۔ کھیل کی مد د سے حل ڈھونڈیں:

لوگوں کو گروپ کی شکل میں جمع کریں۔ ایک گیند، ایک شخص کی طرف اچھالیں۔ وہ گیند پکڑ کر اپنے خیالات کا اظہار کرے۔ آپ اس کے خیالات پر سوچیں اور وہ ساتھ ہی گیند اگلےشخص کی طرف اچھال دے ۔آپ اگلے شخص کو اس معاملے پر بولنے کا موقع دیں۔ یہ عمل جاری رکھیں اور کھیل کے دوران آپ توجہ سے کھیلنے والوں کے دلائل سنتے رہیں۔ اس عمل میں آپ معاملے کی تہہ تک پہنچ کردرپیش مسئلے کا حل تلاش کرلیں گے۔

3۔ درمیان سے شروع کر کے اطراف کو چلیں:

آپ کسی مسئلے کے درمیان سے غور شروع کریں۔ اور پھر اس کے اجزاء کا بغور جائزہ لیں اس طریقے سے آپ کو مختلف تجاویز ملیں گی اور یوں حل کی سمت آپ کے ذہن میں آجائے گی۔

4۔ پہلے غلط جوابات کا مطالعہ کریں:

اپنی مصنوعات کو بہتر بنانے کیلئے اپنے ساتھیوں سے سوالات پوچھیں اور ان کے جوابات پر غور کرنے کے بعد غلط سوالات کو الگ کریں اور قابلِ غور باتوں کو یکجا کر کے حل تلاش کریں اور اپنا آئیڈیا درست کرلیں۔

5۔ اپنے ملازمین کو متحرک کریں:

ہر شخص کے تحت الشعور میں کافی سارے خیالات ہوتے ہیں۔آپ اپنے ملازمین کی حوصلہ افزائی کریں کہ وہ کسی مسئلے پر اپنے خیالات آپ کے سامنے پیش کریں۔ ان کے پاس آپ سے زیادہ قابلِ عمل حل ہو گا۔

6۔ فرضی ٹائم مشین کے ذریعے تجزیہ کریں:

فرض کریں کہ آپ ٹائم مشین کے ذریعے آج سے پچاس سال پہلے کے زمانے میں پہنچ جاتے ہیں اور پھر مستقبل میں سو سال کے بعد آنےوالے زمانے میں پہنچ کر حالات کا مشاہدہ کرتے ہیں ۔ آپ یہ موازنہ کریں کہ پہلے لوگوں کا طرز عمل کیسا تھا اور آئندہ آنے والوں کا طرز عمل کیسا ہوگا۔ دونوں میں فرق معلوم کر کے اپنے موجودہ مسئلے پر اس کا اطلاق کریں۔

7۔ Hemingway Bridgeکا طریقہ استعمال کریں:

Heming wayجو کہ ایک مشہور ناول نگا ر تھا، اس نے اس طریقہ کار پر اپنے بہترین ناول تخلیق کیے۔ اس ترکیب کے مطابق آپ ایک صفحہ ختم کر کے اگلے صفحہ پر اگلے دن کا کام لکھ دیں ۔جس میں آپ یہ لکھیں کہ کل کیا کیا کام کئے جائیں گے۔ ایسا کرنا آپ کیلئے حوصلہ مند ہو گا۔ اس کا مطلب آسان الفاظ میں یہ ہے کہ آپ اپنے ایک پراجیکٹ کے اختتام سے پہلے ہی دوسرے پر کام شروع کردیں گےیہ ایک چست اور تخلیقی سوچ ہے۔

8۔ مختلف شخصیات کی سوچ سے نتیجہ اخذ کرنا:

آپ اپنے گاہکوں، سپلائرز،سرمایہ کاروں، صارفین اور ملازمین کے طرز ِعمل اور گفتگو سے چیزیں سیکھنا جاری رکھیں آپ کو مستقبل میں درپیش بحرانوں سے نمٹنے کیلئےبہت کچھ حاصل ہوگا۔

9۔ حوصلہ افزا ئی کریں:

اگر آپ کے پاس کچھ تعمیری او تخلیقی نظریات ہیں جو کہ قابلِ عمل بھی ہوں اور لوگوں کیلئے قابل قبول بھی، ان کی خوب تشہیر کریں، جہاں موقع ملے ان کا کھل کرپرچار کریں۔

10۔ مستقبل میں درپیش مشکلات کی پیش بینی کریں:

اگر ماضی میں آپکی زندگی میں کچھ ایسے لمحات و واقعات آئے ہوں جہاں آپ اپنی حالت، پراڈکٹ یا ملازمت کے بارے میں پریشان ہوئے ہوں تواپنے مسائل کو یاد کر کے ایک فہرست ترتیب دیں اور حل کے لئے جو جو اقدامات آپ نے اس وقت اٹھائے ان کو ایک ترتیب سے لکھ دیں۔ اگر کسی جگہ کوئی غلطی سرزد ہو ئی ہوتو اسے بھی لکھ دیں۔ مسائل کے حل کا ایک ایسا نسخہ ہے آپ کے ہاتھ آگیا ہے جو مستقبل میں بھی کام آئے گا۔

11۔” TWDR”۔۔۔۔Think,Doodle,Write,Repeat

جب کوئی مسئلہ درپیش ہو تو خوشگوار انداز میں تفریحی خاکہ تیار کریں۔ بار بار سوچیں اور اس طرح کھیل ہی کھیل میں آپ کی تخلیقی صلاحیت کام کرنا شروع کردے گی اورآپ معاملے کی تہہ تک پہنچ جائیں گے۔

12۔ اپنی شخصیت میں توازن پیدا کریں

اپنی شخصیت کو اپنے آس پاس اور اپنے مقابے کے لوگوں کی نظر میں متوازن رکھنے کے طور طریقے سیکھیں ۔ اپنی شخصیت میں توازن اورتخلیقی سوچ کے ذریعے آپ اپنی شخصیت کو پرکشش،پر اثر اور باوقار بنا سکتے ہیں۔ اگر آپ اپنے نظریات کو یکجا کریں تو پھر آپ اپنی تخلیقی سوچ کو قابل استعمال بنا سکتے ہیں۔مختلف جگہوں کی سیر کر کے اور مختلف نکتہ ہائے نظر کے لوگوں سے ملاقات اور گفتگو کر کے آپ اپنی تخلیقی سوچ کو بہتر اور بار بار تازہ دم کر کے اس سے اپنے لئے اور اپنی کمپنی کی بہتری کیلئے کار آمد ہو سکتے ہیں ۔تخلیقی سوچ خداداد صلاحیت ہے مگر مسلسل کوشش سے اسے تازہ دم کیا جاسکتا ہے۔

Key-5۔اپنے منصوبے کو عملی جامع پہنائیں:

یہ آپ کے کاروباری منصوبے کا اہم ترین مرحلہ ہے۔ اس میں آپ کو اپنے تمام پروگراموں کو عملی جامع پہنانا ہے۔ اگر آپ کا منصوبہ ٹھیک سمت میں چل پڑے تو کامیابی آپ کا مقدر بن جاتی ہے۔ اگر منصوبہ درست سمت میں نہ ہو تو ناکامی سے دو چار ہونا پڑے گا۔ آپ کاروباری منصوبے کو مندرجہ نکات کی مدد سے عملی جامع پہنائیں:

1۔ اپنے تمام منصوبوں میں سے اس خیال یا منصوبے کا انتخاب کریں جو آپ کے خیال میں سب سے زیادہ قابل عمل ہو۔

2۔ منتخب شدہ کاروباری منصوبے کی آزمائش کریں اور یہ دیکھیں کہ اس کا رد عمل کیا مل رہا ہے۔ لوگ آپ کے منصوبے کوکس حد تک پسند کر رہے ہیں۔

3۔ آزمائش کے دوران نتائج کوچیک کریں اور یہ دیکھیں کہ نتائج درست بھی ہیں یا نہیں۔

4۔آزمائش کے بعد غلطیوں کو درست کر کے منصوبے پر عمل کریں۔

جب آپ کاروباری منصوبے پر عمل درآمد کر رہے ہوں تو مندرجہ ذیل کا خیال رکھیں:

1۔ درست (سمت)راستے کا انتخاب کریں ۔

2۔ اپنے کام کے تمام نتائج کو روزانہ کی بنیاد پر چیک کریں اور ان کو 1 تا 10 تک نمبر دیں۔ اگر نتیجہ صفر ہو تو صفر نمبر اور نتیجہ پانچ ہوتو 5 نمبر اور اگر نتیجہ بہترین ہو تو پورے دس نمبر دیں۔

3۔ اپنی ٹیم کو جمع کر یں اور اس خیال /منصوبےپر عمل کرنے کا فیصلہ کریں جس کی تائید سب سے زیادہ ٹیم ممبر کرتے ہوں۔

4۔ منصوبوں کے انتخاب کے لئے ایک ٹیم بنائیں جو آپ کو اچھے اور قابل عمل منصوبے بنا کر دے۔

5۔ اس خیال پر عمل کر یں جس کی عوام میں زیادہ پذیرائی ہو۔

6۔منصوبے کی کامیابی کا ایک معیار مقرر کریں۔

7۔ منصوبے کی رفتار کو ساتھ ساتھ چیک کرتے رہیں۔

8۔ اگر آپ کا کاروبار خدمات دینے سے متعلق ہے تو اس کے معیار کو خود چیک کریں۔

9۔ اپنے منصوبے کو قابل عمل بنائیں۔

10۔ اپنی کارگزاری کی فلم بنائیں اور اپنی کامیابی کا موازنہ دیگر اداروں سے کریں۔

11۔ اپنے کام /پروڈکٹ کا ڈیمو دیں اورسارے منصوبے کو ماہرین کے سامنے رکھیں۔

12۔ اپنی پروڈکٹ صارفین کے سامنے پیش کریں اور ان سے رائے لیں۔

یاد رکھنے کی مزید باتیں:

اس مرحلے پر مندرجہ ذیل کا خیال رکھیں:

1۔ کیا آپ کا بجٹ اور آمدن ایک دوسرے سے میچ کرتے ہیں۔

2۔آپ کی ٹیم کے ہر ممبر کا کیا کردا ر ہے؟

3۔ آپ کے کام کا ٹائم ٹیبل کیا ہے؟

4۔ آپ نے منصوبے کو عملی جامع پہناتے وقت خطرات کو کس حد تک سامنے رکھا ہے۔

5۔ آپ نے وسائل جیسا کہ پیسہ، ٹیم ممبر، عمارت، مشینری کو کس حد تک سامنے رکھا ہے؟

6۔ آپ کا مارکیٹنگ منصوبہ کیا ہے؟

نوٹ: منصوبے کو عملی جامع پہناتے وقت گھبرانے یا تذبذب کا شکا ر ہونے کی ضرورت نہیں۔

خلاصہ:

جوش لنکنر کی کتاب “منظم خواب” ((Disciplined Dreamingدور حاضر کے بہت سے نفسیاتی مسائل کا حل غیر متوقع اور اچھوتے انداز میں پیش کرتی ہے ۔ یہ آج کے انسان کو تعمیر و ترقی کے نئے باب کھولنے پر آمادہ کرتی ہے۔ اس میں جدت، تخلیق ، اچھوتے پن اور درپیش مسائل کو ہمت سے برداشت کرنے کے راہنما اصول بیان کئے گئے ہیں ۔کتاب کا باریک بینی سے مطالعے کرنے کے بعد ہم اس نتیجے پر پہنچتے ہیں کہ مصنف روایتی انداز کی بجائے منفرد اور نئے نئے طریقوں سے مسائل کاحل ڈھونڈنے میں دلچسپی رکھتا ہے ۔ کتاب کے مطالعے کے بعد قاری اس نتیجے پر پہنچتا ہے کہ مصنف نے اپنی کتاب میں دی گئی تجاویز کو پہلے خود عمل کی بٹھی سے گزار ا ، اچھی طر ح پرکھنے کے بعد ان کا خود پر اطلاق کیا اور ناقابل یقین کامیابیاں حاصل کیں۔ اس کتاب کی ایک ایک سطر کو مصنف کی بہت سی ناقابل یقین کامیابیوں کے ساتھ جانچا جا سکتا ہے۔ بلاشبہ کتاب” منظم خواب” آپ کی تخلیقی صلاحیتوں کوتقویت بخشنے والی انمول کتاب ہے ،جو دورِ حاضر میں اس موضوع پر دستیاب مواد اور کتابوں میں شاید سب سے بہترین ہے۔

RELATED BOOKS

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں