112

مسجد میں فلم کی عکس بندی، مسجد کا منیجر معطل

5 / 100

مسجد میں فلم کی عکس بندی کے معاملے پر محکمہ اوقاف نے مسجد وزیر خان کے منیجر اشتیاق احمد کو معطل کردیا ہے۔

مسجد وزیر خان لاہور میں مختصر دورانئے کی فلم کی عکس بندی کس کے حکم پر ہوئی؟ مسجد میں اداکارہ صبا قمر اور بلال سعید کے رقص کے وقت مسجد انتظامیہ کہاں تھی؟ محکمہ اوقاف نے تحقیقات کے لیے ڈپٹی ڈائریکٹر فنانس کو مقرر کر دیا۔

واقعہ کے خلاف شہری سرپا احتجاج ہیں اور کہتے ہیں کہ مسجد کا تقدس پامال کرنے والوں کو سخت سزا دی جائے۔

مسجد وزیر خان میں فلم کی ریکارڈنگ کرنے والی کمپنی کا مؤقف ہے کہ انہوں نے محکمہ اوقاف سے شارٹ فلم کی عکس بندی کی اجازت مانگی جو 30 ہزار روپے کی ادائیگی پر مل گئی۔

دوسری طرف مسجد کے منیجر کا کہنا ہے کہ رقص مسجد میں نہیں ہوا، یہ ایڈیٹنگ کا کمال ہے۔

واقعہ پر وزیر اوقاف کہتے ہیں کہ مسجد میں جس کسی نے بھی فلم کی شوٹنگ کی اجازت دی ہے اس کے خلاف کارروائی ہوگی۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ مسجد کا احترام ہر کسی پر لازم ہوتا ہے، مسجد میں فنکاروں کی جانب سے رقص کسی صورت قابل قبول نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں