Pm Imran Khan 109

کورونا کا عروج جولائی کے آخر تک آئے گا، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں ابھی کورونا انتہائی سطح پر نہیں آيا، کورونا کا پیک جولائی کے آخر تک آئے گا۔

کورونا کی روک تھام سے متعلق اجلاس کے بعد اظہارِ خیال کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ لاک ڈاؤن سے کورونا ختم نہیں ہوتا، صرف پھیلنے کی رفتار کم ہوتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی کوشش ہے کہ اس وبا کو آئندہ ڈھائی ماہ میں پھیلنے سے روکا جائے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں لاک ڈاؤن ختم کردیا گيا، امیر ترین ممالک بھی سمجھ گئے کہ لاک ڈاؤن جاری نہیں رہ سکتا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اس ساری صورتحال میں صرف احتیاط ہی حل ہے، احتیاط نہ کی تو پھر ہم پر بھی برازیل اور یورپ جیسی صورتحال آسکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم ایس او پیز پر عمل کریں گے تو اس سے محفوظ رہیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے لوگ مشکل وقت سے گزر رہے ہیں۔

عمران خان نے امریکا کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ امریکامیں کورونا سے ایک لاکھ سے زیادہ لوگ مرگئے، لیکن امریکا میں بھی کاروبارِ زندگی کو ایس او پیز کے ساتھ کھول دیا گیا۔

انہوں نے کہا پاکستان کے عوام نے کورونا وائرس کو سنجیدہ نہیں لیا تو ملک کو نقصان ہوگا۔

ملک میں اسپتالوں کی سہولیات سے متعلق وزیراعظم عمران خان نے بتایا کہ اس ماہ پورے ملک میں آکسیجن سے لیس بیڈز دیے جائیں گے۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ’پاک نگہبان ایپ‘ لاؤنچ کی ہے، جس سے ملک میں دستیاب بیڈز کا پتا لگایا جاسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں