25

کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ بڑھ کر 13 ارب 20 کروڑ ڈالر ہوگیا، اقتصادی رپورٹ

اسلام آباد(نمائندہ نیوز )رواں مالی سال کے پہلے نو ماہ (جولائی تا مارچ ) کے دوران ملک کا کرنٹ اکائونٹ خسارہ بڑھ کر 13ارب20کروڑ ڈالر ہو گیا ، بجٹ خسارہ بڑھ2566ارب روپے ہو گیا جو گزشتہ برس اس عرصے1652ارب روپے تھا، مہنگائی کی اوسط شرح 8.3فیصد سے بڑھ کر 10.8فیصد ہو گئی ، ماہ مارچ میں مہنگائی کی شرح12.7فیصد رہی ، وزارت خزانہ کی ماہانہ اقتصادی رپورٹ کے مطابق مہنگائی کی شرح میں دبائو کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ، عالمی معاشی سرگرمیوں ، سپلائی چین کے مسائل اور قیمتوں میں اضافہ کے بین الاقوامی مسائل کی وجہ سے افراط زر بڑھنے کا امکان ہے ،وزارت خزانہ نے اپریل کی ماہانہ اقتصادی رپورٹ جاری کردی ، رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے نو ماہ ( جولائی تا مارچ )وران ٹیکس ریونیو میں 28.9فیصد اضافہ ہوا ،جبکہ نان ٹیکس ریونیو میں14.3فیصد کمی ہوئی ، بیرون ملک پاکستانیوں کی جانب سےترسیلات زر7.1فیصد زیادہ رہی ہیں ، ملکی برآمدات میں 26.6فیصد گروتھ ہوئی ہے ، مجموعی غیر ملکی سرمایہ کاری بھی گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں 38.39فیصد اضافہ جبکہ براہ غیر ملکی سرمایہ کاری میں 2فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں