19

پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کا ایکشن، ملالہ کی تصویر والی کتابیں ضبط

50 / 100

پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ نے غیر ملکی پبلشر کی جانب سے پاکستان کی اہم شخصیات کی تصاویر میں نوبل انعام یافتہ ملالہ کی تصویر چھاپنے پر تمام کتابیں قبضہ میں لے لی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق غیر ملکی پبلشر کی جانب سے ساتویں جماعت کی سوشل سٹڈیز کتاب میں میجر عزیز بھٹی کی تصویر کیساتھ ملالہ یوسف زئی کی تصویر چھاپی گئی تھی۔ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کے اہلکاروں نے اردو بازار سمیت دیگر مقامات پر چھاپے مار کر کتابوں کو قبضے میں لے لیا ہے جبکہ انتظامیہ نے پبلشر کیخلاف بھی کارروائی کا عندیہ دیا ہے۔ یاد رہے کہ کتاب میں ملالہ کی تصویر کیخلاف سوشل میڈیا پر کافی تنقید کی جا رہی تھی جس کے بعد پنجاب ٹیکسٹ بورڈ حکام نے کتابیں ضبط کرنے کا فیصلہ کیا جبکہ اسی یکساں قومی نصاب میں ٹیچر کے عنوان سے ایک مضمون شامل کیا گیا ہے لیکن اس میں کسی بھی نامور استاد کی شخصیت پیش کرنے کی بجائے استاد نصرت فتح علی خان، استاد غلام علی خان اور اسی طرح کے “استاد” شامل کئے گئے ہیں۔ عوامی حلقوں نے اس پر بھی اعتراض کیا تھا کہ نسل نوء کو معلم کی شناخت کروانے کی بجائے گلوکاروں کی طرف مائل کیا جا رہا ہے، جبکہ آکسفورڈ کے نصاب میں “میرا جسم” کے عنوان سے بھی ایک سبجیکٹ شامل کیا گیا جس میں وہی “میرا جسم میری مرضی” والی سوچ مسلط کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں