23

پاکستان مہنگائی کم کرسکے گا نہ معاشی اہداف پورے، آئی ایم ایف

کراچی(مانیٹرنگ نیوز)عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے ورلڈ اکنامک آؤٹ لک رپورٹ جاری کر دی جس میں کہاگیاہےکہ پاکستان مہنگائی میں کمی،معاشی ترقی کے اہداف پورے نہیں کرسکےگا،رواں مالی سال مہنگائی 11.2، بیروزگاری کی شرح 7فیصد رہنےکا تخمینہ ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کے 5.3فیصد تک پہنچ جائیگا ،گزشتہ مالی سال جی ڈی پی گروتھ 5.6 فیصد تھی،رواں سال معاشی شرح نمو 4فیصد اور آئندہ سال 4.2فیصد رہنے کا تخمینہ ہے۔آئی ایم ایف کی ورلڈ اکنامک آؤٹ لک رپورٹ میں پاکستان میں اس سال معاشی ترقی، مہنگائی اورکرنٹ اکاؤنٹ خسارے کے اہداف پورے نہ ہونے کی پیش گوئی کی گئی ہے۔رپورٹ کے مطابق پاکستان میں اس سال مہنگائی 11.2 فیصد کے دو ہندسوں میں رہنے کا خدشہ ہے جبکہ حکومت نے اوسط مہنگائی کا سالانہ ہدف 8 فیصد مقرر کیا تھا۔ اس کے علاوہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کے 5.3 فیصد تک پہنچ جائے گا جبکہ ہدف 0.7 فیصد مقرر تھا،دوسری جانب کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ تقریباً 19 ارب ڈالرز تک ہونے کا خدشہ ہے۔ آئی ایم ایف کے مطابق گزشتہ مالی سال جی ڈی پی گروتھ 5.6 فیصد تھی جبکہ اس سال 4.8 فیصد کے ہدف کے مقابلے معاشی شرح نمو 4 فیصد اور اگلے سال 4.2 فیصد رہنے کا تخمینہ ہے۔آئی ایم ایف کی ورلڈ اکنامک آؤٹ لک رپورٹ کے مطابق پاکستان میں بے روزگاری کی شرح گزشتہ سال 7.4 فیصد تھی جبکہ اس سال 7 فیصد اور اگلے سال 6.7 فیصد رہنے کا تخمینہ ہے۔رپورٹ کے مطابق یوکرین روس جنگ کی وجہ سے عالمی انسانی بحران پیدا ہوا، اس تنازعے کی وجہ سے عالمی معیشت سست روی کا شکار ہے، اس کی وجہ سے اشیاء کی عالمی قیمتوں، تجارت اور مالی وسائل پر منفی اثرات مرتب ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں