25

وزیراعظم کی زیرصدارت پنجاب پارلیمانی پارٹی کا اجلاس، 54 ارکان غیرحاضر

لاہور(ٹی وی رپورٹ‘اے پی پی) وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت پنجاب کی پارلیمانی پارٹی اجلاس میں 54 ارکان شریک نہیں ہوئے۔ گورنر ہاؤس لاہور میں عمران خان نے پنجاب کی پارلیمانی پارٹی اجلاس کی صدارت کی جس میں پی ٹی آئی اور ق لیگ کے ارکان نے شرکت کی۔ذرائع نے بتایا کہ گورنر ہاؤس کے گیٹ پر 193 ارکان پنجاب اسمبلی کے نام لکھوائے گئے جن میں پی ٹی آئی کے 183 اور ق لیگ کے 10 ممبران کے نام شامل تھے تاہم گورنر ہاؤس گیٹ کے ریکارڈ کے مطابق 139 ممبران داخل ہوئے اور گیٹ پر موجود لسٹ کے مطابق 54 ارکان نہیں آئے۔تحریک انصاف کے رہنما اعجاز چوہدری اور محمودالرشید نے دعویٰ کیا کہ ہمارے 165 ارکان موجود تھے اور 5 سے 7 ممبران راستے میں تھے ۔اے پی پی کے مطابق عمران خان منگل کے روز ایک روزہ دورہ پر لاہور پہنچے‘گورنر ہائوس لا ہور میں ارکان صوبائی اسمبلی نے وزیر اعظم سے ملاقات کی ‘ اس مو قع پر 193پی ٹی آئی ارکارن نے چوہدری پرویزالٰہی کی پنجاب اسمبلی میں بطور لیڈر آف دی ہائوس نامزدگی پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا۔اس موقع پر ارکان اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئےعمران خان نے کہا کہ عثمان بزدار نے عاجزی،انکساری اور شبانہ روز محنت سے ساڑھے تین سال گزارے اور مشکلات کا سامنا کیا‘ وقت ثابت کرے گا کہ وزیر اعلی کی کارکردگی بہترین تھی‘ میں انہیں خراج تحسین پیش کرتا ہوں‘ میری نظر میں ان کا قد بڑھ گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پانچ چھ ماہ سے بیرو نی سازش کا پلان بن رہا تھا اور یہاں کے کھلاڑی اس کا حصہ تھے‘اس مر تبہ پارٹی ٹکٹ دیتے ہوئے خود دیکھوں گا ، مجھے خوشی ہے کہ میری ٹیم ساتھ کھڑی ہے ۔ انہوں نےکہا کہ پاکستان تیزی سے بدل رہاہے ، حلقوں کی سیاست بھی بدل گئی ہے اور اب سب قومی غیرت اور خودداری کی بات کر رہے ہیں ۔پرویز الٰہی کو پورا یقین دلاتا ہوں کہ پارٹی آپ کے ساتھ کھڑی ہے اور آپکو کامیاب کروائے گی ۔ اس موقع پر عثمان بزدار نے پرویزالٰہی کا بھرپور ساتھ دینے کا اعلان کیا۔پرویزالٰہی نے وزیراعظم اور پی ٹی آئی کا بھرپور ساتھ دینے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ وقت ثابت کرے گا کہ یہ ایک اچھا فیصلہ تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں