چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف فوج سے متعلق بیان دینے پر بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست دائر کی گئی ہے۔ لاہور کی مقامی عدالت میں ایڈیشنل سیشن جج نے شہری مظفر حسین کی عمران خان کے خلاف فوج سے متعلق بیان دینے پر بغاوت کے مقدمے کے اندراج کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ عمران خان نے 4 ستمبر کو جلسے سے خطاب میں فوج سے متعلق بیان دیا، جس سے پاک فوج کے سپاہی سے لے کر آرمی چیف تک سب کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔ درخواست گزار نے استدعا کی کہ عدالت سمن آباد پولیس کو عمران خان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے۔ عدالت نے درخواست پر سمن آباد پولیس سے 10 ستمبر کو رپورٹ طلب کرلی ہے۔ گزشتہ دونوں عمران خان نے فیصل آباد جلسے میں پاک فوج کی سینئر قیادت سے متعلق ہتک آمیز بیان دیا تھا۔ عمران خان کے اس بیان پر ملکی قیادت اور پاک فوج کی جانب سے شدید ردعمل کا اظہار کیا گیا۔ 68

فوج سے متعلق بیان: عمران خان پر بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست دائر

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف فوج سے متعلق بیان دینے پر بغاوت کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست دائر کی گئی ہے۔

لاہور کی مقامی عدالت میں ایڈیشنل سیشن جج نے شہری مظفر حسین کی عمران خان کے خلاف فوج سے متعلق بیان دینے پر بغاوت کے مقدمے کے اندراج کی درخواست پر سماعت کی۔

درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ عمران خان نے 4 ستمبر کو جلسے سے خطاب میں فوج سے متعلق بیان دیا، جس سے پاک فوج کے سپاہی سے لے کر آرمی چیف تک سب کے جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

درخواست گزار نے استدعا کی کہ عدالت سمن آباد پولیس کو عمران خان کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے۔

عدالت نے درخواست پر سمن آباد پولیس سے 10 ستمبر کو رپورٹ طلب کرلی ہے۔

گزشتہ دونوں عمران خان نے فیصل آباد جلسے میں پاک فوج کی سینئر قیادت سے متعلق ہتک آمیز بیان دیا تھا۔

عمران خان کے اس بیان پر ملکی قیادت اور پاک فوج کی جانب سے شدید ردعمل کا اظہار کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں