152

شہبازشریف کی گرفتاری کیلئے نیب کا چھاپا، اپوزیشن لیڈر گھر پر نہیں ملے

قومی احتساب بیورو کی خواتین اہلکار شہباز شریف کے گھر میں داخل ہوئیں، اور تقریباً ڈیڑہ گھنٹے تک وہاں پر موجود رہیں۔

تاہم جب نیب ٹیم کو اطمینان ہوا کہ شہباز شریف موجود نہیں ہیں تو پھر ٹیم واپس چلی گئی۔

اس موقع پر مسلم لیگ (ن) کے رہنما اور کارکنان بڑی تعداد میں ماڈل ٹاؤن لاہور پہنچ گئے تھے، جہاں انہوں نے حکومت اور نیب مخالف نعرے بازی کی۔

مریم اورنگزیب، عظمیٰ بخاری اور دیگر رہنما بھی شہباز شریف کی رہائش گاہ کے باہر موجود رہے۔واضح رہے کہ قومی احتساب بیورو کی ٹیم نیب آرڈیننس کے تحت پیشی پر نہ آنے پر شہباز شریف کو گرفتار کرنے کے لیے ان کی رہائش گاہ پہنچی تھی۔
پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف قومی احتساب بیورو (نیب) کے سامنے پیش نہیں ہوئے تھے اور اس سے متعلق انہوں نے تفصیلی جواب جمع کروادیا تھا۔

شہباز شریف کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں نیب لاہور کے سامنے پیش ہونا تھا۔

اپوزیشن لیڈر نے اپنی عدم پیشی سے متعلق نیب میں جواب جمع کروایا جس میں موقف اختیار کیا کہ کورونا وائرس اس وقت اپنے عروج پر ہے، نیب کے کچھ افسران بھی کورونا کا شکار ہوچکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان کی عمر 69 برس ہے اور وہ کینسر کے مریض ہیں۔

شہباز شریف نے نیب سے کہا تھا کہ وہ ان سے احتیاط برتتے ہوئے آن لائن سوال کرسکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں