46

سانحہ ماڈل ٹاؤن دوسری جے آئی ٹی کیخلاف درخواستیں، ہر فریق کو شنوائی کاپوراموقع دیں گے :لاہور ہائیکورٹ

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ امیر بھٹی ،جسٹس ملک شہزاد احمد خان،جسٹس عالیہ نیلم ،جسٹس شہباز رضوی ،جسٹس سردار احمد نعیم ،جسٹس سرفراز ڈوگر اور جسٹس طارق سلیم شیخ پرمشتمل فل بنچ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی دوسری جے آئی ٹی کے خلاف درخواستوں کی سماعت آج تک ملتوی کرتے ہوئے قراردیاہے مقدمہ کے ہر فریق کو اس وقت تک شنوائی کاموقع دیا جائے گا جب تک وہ یہاں سے نہ جائے ۔لاہورہائی کورٹ کے جسٹس شمس محمود مرزا نے کنٹونمنٹ بورڈ کے الیکشن نتائج رکوانے اور دوبارہ گنتی کی درخواست ناقابل سماعت قراردے کرمستردکردی ،فاضل جج نے قراردیا درخواست گزارمتعلقہ فورم سے رجوع کریں۔جسٹس جواد حسن نے دوبارہ گنتی کے لئے دائر تحریک انصاف کے امیدوار اسلم جٹ کی درخواست پر متعلقہ آراو کو ہدایت کی ہے کہ درخواست گزار کاموقف سن کر قانون کے مطابق فیصلہ کیاجائے ۔لاہورہائی کورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے جانشینی سرٹیفکیٹ جاری کرنے کا اختیار نادرا کو دینے کے اقدام کے خلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے یانہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا۔لاہور ہائی کورٹ نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے آئین 2019 ئکے خلاف دائردرخواستوں پرفریقین کے وکلائکو آئندہ سماعت پرتیاری کے ساتھ عدالت میں پیش ہونے کی ہدایت کر تے ہوئے پروفیسر صادق کی درخواست پر اپنے حکم امتناعی میں توسیع کردی ۔لاہورہائی کورٹ کے جسٹس محمد رضا قریشی نے پروفیسرڈاکٹرعاطف یعقوب کوگورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور کے شعبہ زوآلوجی کے سربراہ کے عہدہ سے ہٹانے کے نوٹیفکیشن پرعملدرآمدکو سینڈیکیٹ میں اپیل کے فیصلے سے مشروط کردیا،فاضل جج نے درخواست نمٹاتے ہوئے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور کے سینڈیکیٹ کو ہدایت کی کہ عدالتی حکم موصول ہونے کے بعد ایک ماہ کے اندر اندر اپیل کا فیصلہ کیاجائے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں