73

آئی ایم ایف جلد 1.9 ارب ڈالر دیگا بوجھ عوام کو ہی اٹھانا ہوگا وزیراعظم

آئی ایم ایف جلد 1.9 ارب ڈالر دیگا بوجھ عوام کو ہی اٹھانا ہوگا وزیراعظم
اسلام آباد (این این آئی)وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف سے جلد1.9 ارب ڈالر مل جائینگے، بوجھ عوام کو ہی اٹھانا ہوگا، اصل منزل خودانحصاری ہے، سابق حکومت نے بجلی کی پیداوار کے منصوبوں میں تاخیر اور گیس کے سستے اور طویل مدتی معاہدے نہ کر کے ملک کو نقصان پہنچایا، سپر ٹیکس کا پیسہ ضائع نہیں ہونے دینگے، ریئل اسٹیٹ ملک کا حصہ ہے ، سٹے بازی نہیں ہونی چاہیے، زراعت کے شعبہ کی ترقی کیلئے کسانوں کو سہولیات دی جائینگی، سرخ فیتے ، پرمٹ، این او سی، دفاتر اور سفارش کا چکر اب ختم ہونا چاہیے، افغانستان سے کوئلے کی درآمد سے سالانہ دو ارب ڈالر کی بچت ہوگی،اس کوئلے سے بجلی کے پلانٹس چلائے جائینگے، آئی ایم ایف سے جلد 2 ارب ڈالر مل جائینگے،بنگلہ دیش نے IMF، عالمی بینک اور کسی دوسرے مالیاتی ادارے کی مدد کے بغیر 6 ارب ڈالر کا بنیادی ڈھانچے کا ایک بڑا منصوبہ بنایا ہے۔ 75 سال میں پاکستان بہت پیچھے رہ گیا ۔ وہ منگل کو یہاں ٹرن ارائونڈ پاکستان کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے ۔وزیراعظم نے کہا کہ خود انحصاری اصل منزل ہے، مخلوط حکومت میں چاروں صوبوں کی نمائندگی ہے اور مشاورت سے فیصلے کئے جائیں تو انہیں تقویت ملتی ہے۔ ملک کی معاشی صورتحال کو بہتر بنانے کا چیلنج سب نے ملکر قبول کیا ہے، اس ذمہ داری کو ہم نبھائیں گے،خودانحصاری ہی کسی قوم کی سیاسی اور معاشی آزادی کی ضمانت ہوتی ہے اس کے بغیر کوئی قوم آزادنہ فیصلے نہیں کرسکتی۔ پاکستان میں وسائل اور باصلاحیت افراد کی کمی نہیں ہے، تجارت، معیشت، سیاست ، سفارتکاری اور صحافت تمام شعبوں میں قابل افراد موجود ہیں، اللہ تعالیٰ نے ہمیں بے شمار نعمتوں سے نوازا ہے، ریکوڈک میں ارب ڈالر کا خزانہ دفن ہے لیکن ابھی تک ہم نے اس سے ایک پائی نہیں کمائی الٹا مقدموں پر اربوں روپے ضائع کر دیئے گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں