276

عمان کے وزیرخارجہ کی صدرحسن روحانی سے ملاقات، دوطرفہ تعلقات پرتبادلہ خیال

عمان کے وزیرخارجہ کی صدرحسن روحانی سے ملاقات، دوطرفہ تعلقات پرتبادلہ خیال

منگل کو تہران میں عمان کے وزیر خارجہ یوسف بن علوی نے اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی سے ملاقات میں کی۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ خطے کے ممالک اور اقوام کے درمیان بھائی چارہ اور دوستی ہی خطے کی سلامتی کی ضمانت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پورے خطےمیں سیکورٹی اور تعاون کو فروغ دے کر خلیج فارس اور آبنائے ہرمز میں امن قائم رکھا جاسکتا ہے۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ ہمیں خطے میں اغیار کو مداخلت کی ہرگز اجازت نہیں دینا چاہئے۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ یمن کا مسئلہ خطے کا اہم ترین مسئلہ ہے، یمن میں جنگ سے تباہی، عوام کے قتل عام، دو پڑوسی ملکوں کے درمیان کینہ و دشمنی اور یمن کی ارضی سالمیت کے لئے خطرے کے سوا کوئی دوسرا نتیجہ نہیں نکلا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یورپ اور امریکا یمن میں امن نہیں چاہتے ہیں تاکہ وہ اپنے ہتھیاروں کو فروخت کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ سب کو کوشش کرنا چاہئے کہ یمنی گروہوں کے درمیان مذاکرات کے ذریعے یمن میں جلد سے جلد جنگ ختم اور امن و استحکام قائم ہو۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ تہران کی نظر میں ایران کو اپنے پڑوسیوں کے ساتھ تعلقات کو فروغ دینے اور سعودی عرب کے ساتھ پھر سے تعلقات قائم کرنے میں کوئی مشکل نہیں ہے کہا کہ شام، عراق اور لبنان میں سعودی حکومت کی پالیسیوں کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا ہے اور اس ملک کے حکام کو اپنی پالیسیوں کو تبدیل کردینا چاہئے۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ عمان ، علاقے میں تجارت کا مرکز بن سکتا ہے، دوطرفہ تعاون کے فروغ پر تاکید کی۔ عمان کے وزیرخارجہ یوسف بن علوی نے بھی ایران اور عمان کے درمیان تعاون اور تعلقات کے فروغ کو علاقے کے تمام ممالک کے حق میں قرار دیا اور کہا کہ ہرمز امن منصوبہ پیش کرنے میں ایران کی جدت عمل اور پہل سب کے مفاد میں ہے اور یہ علاقے کے ممالک کے درمیان امن و استحکام کے فروغ پانے کا باعث ہوگی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں