198

عرب دنیا سوگ میں ڈوب گئی ،اہم ملک کے فرمانروا چل بسے،خدمات کو خراج تحسین

Sultan Kaboos,عرب دنیا سوگ میں ڈوب گئی ،اہم ملک کے فرمانروا چل بسے،خدمات کو خراج تحسین
خلیجی ریاست سلطنت آف عمان کے فرمانروا سلطان قابوس بن سعید انتقال کرگئے۔ مرحوم کچھ عرصے سے صاحب فراش تھے۔ کے مطابق سلطنت عمان کے صدر دفتر سے جاری ایک بیان میں سلطان بن قابوس بن سعید کی وفات کا اعلان کیا گیا۔ اس کے بعد عمان کی سرکاری نیوز ایجنسی اور سرکاری ٹیلی ویژن چینل پر بھی ان کی وفات کی خبر نشر کی گئی ہے۔سلطان قابوس بن سعید کی وفات کے بعد ملک میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا ہے جب کہ آئندہ 40 دن تک سلطان کے سانحہ ارتحال پر ملک کا پرچم سرنگوں

رہے گا۔شاہی دیوان کی طرف سے جاری بیان میں مرحوم سلطان قابوس کی ملک وقوم کے لیے شاندار خدمات پر انہیں خراج عقیدت پیش کیا گیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ سلطان قابوس نے 50 سال تک ملک کی خدمت کی اور اسے ترقی کی معراج تک پہنچایا۔ وہ جمعہ اور ہفتے کی درمیانی شب خالق حقیقی سے جا ملے۔سلطان قابوس بن سعید سلطنت عمان کے آل ابو سعید خاندان کے آٹھویں فرمانروا تھے۔ آل سعید خاندان نے سنہ 1741 کو امام احمد بن سعید کے دور میں سلطنت قائم کی۔ سلطان قابوس اس سلسلے کی آٹھویں کڑی سمجھے جاتے تھے۔سلطان قابوس 18 نومبر 1940 کو ظفار گونری کے صلالہ شہر میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم اومان ہی سے حاصل کی۔ سنہ 1960 کو انہوں نے برطابوی شاہی ملٹری اکیڈمی سینڈہرسٹ میں شمولیت اختیار کی۔ اس کے بعد مغربی جرمنی میں برطانوی پیادہ فوج میں کچھ عرصہ تربیت حاصل کی۔سنہ 1964 میں وطن واپسی کے بعد انہوں نے اسلامی شرعی علوم، اسلامی تہذیب اور سلطنت کی تاریخ کے شعبے میں تعلیم حاصل کی۔سلطان قابوس نے 23 جولائی 1970 کو اقتدار سنبھالا۔ اس دوران انہوں نے ملک میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کیں۔ ان کی سیاسی، اقتصادی، عسکری، سماجی اور ثقافتی اصلاحات کو ہمیشہ قدر کی نگاہ سے دیکھا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں