28

سیاحوں کے بار بار مکے برسانے پر ٹرمپ کے مجسمے کو ہٹا دیا گیا

54 / 100

سیاحوں کے بار بار مکے برسانے پر ٹرمپ کے مجسمے کو ہٹا دیا گیا

ٹیکساس (ویب ڈیسک) امریکا کے ایک عجائب گھر میں رکھے سابق صدر ٹرمپ کے مجسمے پر سیاحوں کی مکے بازی پر مومی مجسمے کو ہٹا دیا گیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ٹیکساس کے شہر سان اینٹونیو کے ایک عجائب گھر میں آنے والے سیاح ٹرمپ کے موم سے بنے مجسمے پر مکے مارتے اور اپنے غصے کا اظہار کرتے تھے جس پر انتظامیہ نے سابق صدر کے مجسمے کو ہٹا دیا ہے۔سان اینڈونیو کے عجائب گھر کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ اقدام سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مجسمے کی حفاظت کے پیش نظر کیا گیا ہے جو بعد میں کسی وقت دوبارہ نصب کردیا جائے گا اور عین ممکن ہے ایسا صدر جوبائیڈن کے مجسمے کے ساتھ لگادیا جائے۔
سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی صرف امریکا میں ہی مقبولیت میں کمی نہیں آئی بلکہ دنیا بھر میں سابق صدر کی شہرت کو ٹھیس پہنچی ہے، گزشتہ برس اکتوبر 2020 میں برلن کے مادام تساؤ میوزیم سے بھی امریکی صدارتی انتخابات سے قبل ہی ڈونلڈ ٹرمپ کا مجسمہ ہٹا دیا گیا تھا۔
سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر صدارتی الیکشن میں شکست تسلیم نہ کرنے اور اپنے ووٹرز کو کانگریس کی عمارت پر حملے کے لیے اکسانے پر کڑی تنقید کا سامنا رہا ہے جس پر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز نے بھی ان کے اکاؤنٹس بند کردیئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں