39

حکم امتناع ختم، چینی انکوائری رپورٹ پر کارروائی کی اجازت

اسلام آباد ہائی کورٹ نے چینی انکوائری کمیشن کی رپورٹ پر شوگر ملز کا اسٹے آرڈر ختم کردیا اور متعلقہ اداروں کو کمیشن کی رپورٹ پر کارروائی کی اجازت دیدی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس اطہر من الّٰلہ نے شوگر ملز کی اسٹے آرڈر کی درخواست پر مختصر فیصلہ سنادیا۔

عدالت عالیہ نے شوگر ملز کی درخواست پر جاری حکم امتناع کو ختم کردیا ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے تمام متعلقہ اداروں کو چینی انکوائری رپورٹ پر کارروائی کرنے کی اجازت بھی دے دی۔

فیصلے میں عدالت نے ریمارکس دیے ہیں کہ وفاقی حکومت کا چینی کیس پر اختیارات شہزاد اکبر کو تفویض کرنا درست نہیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کے مطابق قومی احتساب بیورو (نیب) آرڈیننس کے تحت وفاقی حکومت کیس نیب کو بھیج سکتی ہے۔

تاہم اسلام آباد ہائیکورٹ نے چینی انکوائری کمیشن کی تشکیل درست قرار دے دی۔

اس کے ساتھ ساتھ عدالت نے یہ بھی ریمارکس دیے ہیں کہ وفاقی حکومت اپنے اختیارات کسی کو تفویض نہیں کرسکتی۔

واضح رہے کہ چینی انکوائری کمیشن کی رپورٹ پر کارروائی پر اسٹے آرڈر سے متعلق درخواست پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین نے دائر کی تھی۔

قبل ازیں اسلام آباد ہائی کورٹ نے انکوائری کمیشن رپورٹ کی روشنی میں حکومتی اداروں کو شوگر ملز کے خلاف کارروائی سے روکنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں